Site Loader
Get a Quote

Compiled & Written By Shah Jahan Ashraf (Social Expert & Researcher, MPhil Sociology) for feedback sja1292@gmail.com

ا 14 اگست 1947 کو چاند ستارے کے ساتھ ابھرنے والا اسلامی جمہوریہ پاکستان 22 کروڑ سے بھی زیادہ آبادی والا دنیا کا پانچواں بڑا جبکہ رقبے کے لحاظ سے 33 واں بڑا ملک۔ مگر ہیلتھ کیٸر سسٹم میں رینکنگ 100 سے بھی نیچے ہے اور جس کا موٹو / سلوگن / قول ہے۔
” ایمان ، اتحاد ، نظم “
Motto of Pakistan : Faith, Unity, Discipline
اب بات کرتا ہو کورونا کے متعلق پاکستان میں کورونا کے پہلے ایک ہزار کیس 30 دنوں میں جبکہ مزید  ایک ہزار کیس صرف 6 دن میں درج ہوٸے. مگر یہاں بات ڈرنے کی نہیں لڑنے کی ہے کیونکہ عالمی ادارہ براہ صحت کے مطابق جہاں اٹلی، فرانس، سپین، جرمنی اور امریکہ جیسے ترقی یافتہ اور بہترین ہیلتھ کیٸر سسٹم رکھنے والے ممالک بے بس نظر آ رہے ہیں وہیں چاٸینہ نے جس کا نام ہیلتھ کیٸر سسٹم کی رینکنگ میں ان سب ممالک سے نیچے ہے چاٸینہ نے کمال کر دیکھایا اور وہ کمال تھا محنت، احتیاط اور حکومت کا ساتھ۔
چنانچہ ابھی پاکستان میں خطرہ شروع ہوا ہے۔  اب پہلے سے بھی زیادہ محتاط رہنے کی ضرورت ہے۔  یہ وائرس صرف ایک شخص کے لئے نہیں بلکہ پورے خاندان اور معاشرے کے لئے خطرناک ہے۔

اب آئیے اس بارے میں جانیں کہ ہم اپنے روزمرہ کے طرز عمل اور معمولات میں معمولی اور کونسی عملی تبدیلیوں کے ذریعے اپنے اور اپنے پیاروں کی حفاظت کیسے کرسکتے ہیں۔

ڈریں نہیں لڑیں مگر احتیاطی تدابیر کو سنجیدہ لے کر!

مدافعتی نظام کو مستحکم رکھنے کے لئے کس طرح تیار رہیں

سبزیوں اور پھلوں کا استمعال زیادہ کریں۔
ملٹی وٹامنز
گوشت / انڈے /شہد / کھجوروں کے ذریعے پروٹین حاصل کریں۔
کالونجی ، لہسن ، ہلدی جیسے مصالحہ جات کا استمعال کریں۔
آٸسکریم جیسی زیادہ ٹھنڈی چیزیں کھانے سے پرہیز کریں۔
8 سے 10 گھنٹے کی نیند پوری کریں ہے۔
ہر گھنٹے بعد پانی پیتے رہیں۔
بھاپ لینے کا بھی معمول بناٸیں۔
تیز بخار سے بچیں۔
ذہنی تناؤ / ٹینشن والی باتوں سے اور منفی سوچوں سے دور رہیں خصوصاً نیوز چینلز کو بار بار دیکھنے سے گریز کریں۔
تھوڑی سی ورزش کا معمول بنالیں۔
دھوپ سے تازہ دم ہوتے رہیں.

کسی ناگزیر بیرونی سرگرمی کی وجہ سے گھر سے باہر ہونے پر کورونا کے خلاف اہم ہتھیار

اگر آپ تندرست ہیں تو باہر جاتے وقت ماسک کا استمعال کریں۔ اگر آپ کو کھانسی یا زکام ہے تو سرجیکل ماسک کااستمعال کریں۔

کبھی بھی اپنے چہرے ( آنکھوں ، ناک اور ہونٹوں) کو اپنے ہاتھوں سے مت چھوٸیں ! سوائے ہاتھ دھونے / صاف کرنے کے بعد۔

ہر 30 سے ​​40 منٹ کے بعد ہاتھ دھونے / صاف کرنے کی عادت بنالیں۔

ہر انسان سے 3 سے 6 فٹ کا فاصلہ ضرور رکھیں تاکہ
اگر وہ چھینک رہا ہو کھانسں رہا ہو یا بات چیت کرتے ہوئے بھی تو اس کے منہ یا ناک سے کسی بھی قسم کے مائع سے بچا جاسکے۔

کسی دوسرے شخص کے کسی بھی مائع سے محفوظ رہنے کے لئے ماسک پہنے رکھیں اور یہ قدرتی طور پر آپ کو اپنے ہاتھوں سے خود کہ منہ کو چھونے سے بھی محفوظ رکھے گا۔
کوشش کریں کہ اپنے ارد گرد کی سطح/ چیزوں کو کم سے کم  چھوا جاٸے۔

بیرونی سرگرمیوں کے بعد جب آپ گھر واپس آجائیں تو کیا کریں

سب سے پہلے ، جوتے کو مین گیٹ کے پاس ایک ڈبے میں رکھیں اور ایسی جگہ رکھیں جہاں کوئی انھیں چھو نہ سکے۔

دوم ، کپڑے تبدیل کریں ، انہیں باکس میں یا واشنگ مشین میں رکھیں ، شاور لیں اور پھر اپنے گھر والوں سے ملیں۔

چابیاں ، بٹوے ، پاکٹ سائز والے سینیٹائزر کو ایک ڈبے میں رکھیں اور ایسی جگہ رکھیں جہاں کوئی ان کو ہاتھ نہ لگائے۔  اگر آپ کو انہیں گھر میں استعمال کرنے کی ضرورت ہو تو ان کو جراثیم کش کریں۔

کلورین پر مبنی ڈس انفیکٹ سپرے یا ڈیٹول مخلوط پانی کے ساتھ داخل ہونے والے مرکزی دروازہ ، دروازے کی نوبس ، کار / موٹرسائیکل کا داخلہ اور فرش کو کپڑے پر لگا کر یا سپرے کی صورت میں جراثیم کش کریں۔
اور پر سکون ہو جاٸیں اور گھر میں فیملی کے ساتھ لطف اندوز ہوتے رہیں۔ بچوں اور بزرگوں کا خصوصاً خیال رکھیں۔

مزید اپنی پسند کے مشغلوں سے بھی لطف اندوز ہوتے رہیں جیسے کہ باغبانی، کتابیں پڑھنا اور بچوں سے کھیل کود وغیرہ اور ان اصولوں کو اپنی عادت بنالیں یہاں تک کہ یہ مسئلہ حل ہوجائے اور سب سے بڑھ کر اللہ سے رحمت کی دعا مانگتے رہیں۔ اللہ پاک ہم سب کو اپنے حفظ و امان میں رکھے۔

گزارشی نوٹ : کورونا کو سیاسی بحث سے دور رکھیں اور تمام احتیاطی تدابیر پر عمل کریں کیونکہ جن ممالک میں کورونا کنٹرول میں ہے وہ انہیں تدابیر پر عمل کرتے ہوٸے اپنی زندگی کو عام معمولات پر لا رہے ہیں۔

Chain of Infection (Picture by MBRU)

Comment your feedback

Post Author: admin

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *